18 March, 2016 05:55


NADEEM MALIK LIVE

http://videos.samaa.tv/NadeemMalik/

17-MARCH-2016

ہم پیپلز پارٹی کی حکومت کے ساتھ تھے لیکن وہ پرویز مشرف کے خلاف کچھ نہ کر سکی۔ طارق فضل چوہدری کی ندیم ملک لائیو میں گفتگو

سندھ ہائی کورٹ نے مشرف کا نام ای سی ایل لسٹ سے نکالا ہم اس کے خلاف سپریم کورٹ میں گئے۔ طارق چوہدری

اس وقت مشرف کی حالت ایسی ہے کہ ہر روز ہسپتال جاتے ہیں۔ طارق چوہدری

چوہدری نثار اپنی پریس کانفرنس میں جو منہ میں آیا کیتے گئے انہوں نے حقائق کو بھی مد نظر نہیں رکھا۔ قمر زمان کائرہ

جب پیپلز پارٹی بر سر اقتدار آئی تو مشرف صدر تھے ان کے ساتھ عدلیہ تھی ق لیگ تھی اور پارلیمان کے لوگ بھی تھے۔ کائرہ

مسلم لیگ ن مکمل طور پر ہمارے ساتھ نہیں تھی ہم کمزور تھے اور لڑائی کی طرف نہیں جانا چاہتے تھے۔ کائرہ

مشرف کو گارڈ آف آنر فوج کے دستے نے دیا جو پارلیمنٹ میں موجود ہوتا ہے پیپلز پارٹی کا کوئی بندہ مشرف کو گارڈ آف آنر دینے کے لئے نہیں گیا۔ کائرہ

مشرف وہی صدر ہے جس سے چوہدری نثار نے بھی حلف لیا تھا۔ کائرہ

میں نہیں کہہ رہا عدالت نے کہا ہے کہ حکومت عدالت کے پیچھے چھپنے کی کوشش کر رہی ہے۔کائرہ

حکومت کریڈٹ لے رہی ہے کہ اس نے مشرف کے خلاف آرٹیکل چھ کا مقدمہ کیا اگر اڑنا نہیں آتا تھا تو پھر یہ کیوں کیا۔ کائرہ

پیپلز پارٹی مشرف سے لڑائی نہیں کرنا چاہ رہی تھی تو پھر میاں صاحب کو کیوں لڑانا چاہ رہے ہیں۔ ارباب غلام رحیم

مشرف کو انسانی بنیادوں پر چھوڑا گیا ہے ان کی صحت ٹھیک نہیں ہے،ارباب غلام رحیم

مسلم لیگ ن میں مشرف کے خلاف ایک نفرت پائی جاتی ہے۔ فیصل واڈا

ساٹھ فیصد پرویز مشرف کے ساتھی مسلم لیگ ن کی کابینہ کا حصہ بنے ہوئے ہیں۔ فیصل واڈا

مسلم لیگ ن نے بارہ مئی کو بھی ایک طرف رکھ دیا ان کا دوہرا معیار ہے۔ فیصل واڈا

مسلم لیگ ن وہ جماعت ہے جس کی پیدائش ضیاالحق کے دور میں ہوئی اور بڑھی پھولی۔ فیصل واڈا

پرویز مشرف نواز شریف کی طرح کوئی معاہدہ کر کے ملک سے باہر نہیں جا رہے وہ واپس آ جایں گے۔ فیصل واڈا

پرویز مشرف ہو یا کوئی اور سیاسی جماعت ہو ہم سب کو ساتھ لے کر چلنا چاہتے ہیں۔ افتخار عالم

ہماری آج کی پریس کانفرنس بہت بھاری ہے اس لئیے اسے نو بجے تک کے لئیے ملتوی کر دیا گیا ہے۔ افتخار عالم

آج جو لوگ ہمارے ساتھ مل رہے ہیں ان کی تعداد ایک سے زیادہ ہو سکتی ہے۔ افتخار عالم

یحیی خان نے ملک توڑا تھا اسے پیپلز پارٹی نے سیلیوٹ مارا اور وہ آرام سے ادھر ہی رہتے رہے۔ ارباب رحیم

مسلم لیگ ن کو فوج کے ساتھ اچھے تعلقات رکھنے چاہئییں پیپلز پارٹی نے بھی فوج سے اچھے تعلقات رکھے۔ ارباب غلام رحیم

میں نے نواز شریف کو دبئی میں کہا تھا کہ اسٹیبلشمنٹ کے ساتھ بار بار رخنہ نہ کریں۔ ارباب رحیم

دنیا کے ہر ملک میں اسٹیبلشمنٹ ایک کردار ادا کرتی ہے بھارت میں بھی ایسا ہی ہوتا ہے۔ ارباب رحیم

میڈیا مشرف والا معاملہ اس طرح پیش کر رہا ہے جیسے ہماری اس کے ساتھ کوئی زاتی لڑائی ہے۔ طارق فضل چوہدری

ہم نے آئین توڑنے والوں کے خلاف اپنا پورا کردار ادا کیا ہے۔ طارق چوہدری

اس وقت انیس ایڈووکیٹ اور عادل صدیقی کا مصطفی کمال کے ساتھ مل جانے والوں میں نام آ رہا ہے۔ فیصل واڈا

میں وہ آدمی ہوں جس نے الطاف حسین کے خلاف اس وقت آواز اٹھائی تھی جب کسی میں اس کی کرات نہیں تھی۔ فیصل واڈا

مصطفی کمال ہوں یا کوئی اور جو بھی تشدد اور بندوق کی سیاست نہیں کرے گا ہم اسے خوش آمدید کہیں گے۔ فیصل واڈا

میرا خیال ہے کہ مسلم لیگ ن میں سے کوئی بھی مصطفی کمال کے ساتھ شامل نہیں ہو گا۔ ارباب رحیم

پیپلز پارٹی میں ایک ناراض گروپ ہے جو ان سے علحیدہ ہو سکتا ہے۔ فیصل واڈا

کراچی میں آنے والی تبدیلی کراچی سے سندھ اور پھر پنجاب میں داخل ہوتی دیکھ رہا ہوں۔ فیصل واڈا

پیپلز پارٹی میں فارورڈ بلاک بننے کا تھوڑا سا امکان دیکھ رہا ہوں لیکن اس کے لئیے انہیں ایم کیو ایم کی مدد کی ضرورت ہو گی۔ ارباب رحیم

مصطفی کمال کی جماعت کے سربراہ وہ ہوں گے جنہیں سفید قمیص پہننا بہت پسند ہے۔ فیصل واڈا