24 March, 2016 06:29


NADEEM MALIK LIVE

http://videos.samaa.tv/NadeemMalik/

23-MARCH-2016

پاکستان میں کرکٹ کی تباہی کے زمہ دار پیٹرن ان چیف نواز شریف ہیں جنہوں نے لوگوں کو لگایا ہوا ہے باقی کسی کا نام لینے کی ضرورت ہی نہیں ہے۔ عامر سہیل کی ندیم ملک لائیو میں گفتگو

وزیراعظم سیاست دان ہیں جب تک وہ کرکٹ کی سیاست کو سمجھنے والے لوگوں کو نہیں لگایں گے کرکٹ کا یہی حال رہے گا۔ عامر سہیل

نجم سیٹھی کو کرکٹ کی کوئی سمجھ نہیں ہے اتنا ہارنے کے باوجود اس کے خلاف کوئی ایکشن نہیں لیا گیا اس کا مطلب ہے کہ اس کے ساتھ کوئی سمجھوتہ کیا ہوا ہے۔ عامر سہیل

ہم نے کرکٹ نان پروفیشنل لوگوں کے ہاتھوں میں دے دی ہے نجم سیٹھی صاحب بڑے پڑھے لکھے آدمی ہیں لیکن وہ کرکٹ کو نہیں جانتے۔ شاہ محمود قریشی

لاہور میں میرے گھر کے ساتھ کرکٹ اکیڈمی ہے جو ویران پڑی ہوئی ہے۔ شاہ محمود ریشی

نواز شریف کو کرکٹ میں بہت دلچسپی ہے لیکن کرکٹ کی انہوں نے ٹھیک طرح سے خدمت نہیں کی۔ شاہ محمود قریشی

کرکٹ ٹیم کی کارکردگی اچھی نہیں رہی اس پر پورڈ کے سربراہ کو خود بھی اپنے بارے میں سوچنا چاہئیے۔ ڈاکٹر مصدق

اگر نواز شریف نے کسی کو کرکٹ بورڈ کا سربراہ مقرر کیا ہے اور اس کی کارکردگی اچھی نہیں رہی تو اس میں نواز شریف کا کوئی قصور نہیں ہے، ڈاکٹر مصدق

کرکٹ ٹیم کی اتنی بری کارکردگی کے باوجود اگر وزیراعظم نے اس کی مینجمنٹ کو تبدیل نہیں کیا تو اس کی کوئی تو وجہ ہو گی۔ عامر سہیل

ہم تین ورلڈ کپ ہار گئے ہیں لیکن وزیراعظم نے کسی کے خلاف کوئی ایکشن نہیں لیا۔ عامر سہیل

ٹیم کی بری کارکردگی پر کرکٹ بورڈ کی ایگزیکٹو کمیٹی کا بھی احتساب ہونا چاہئیے اور وہ ابھی ہو گا۔ ڈاکٹر مصدق

کرکٹ بورڈ کا احتساب ہونا چاہئیے اور ٹیم میں نئے نوجوان کھلاڑیوں کو کھیلنے کا موقع دیا جانا چاہئیے۔ شاہ محمود قریشی

ہم باقی دنیا کی ٹیموں سے پانچ سال پیچھے رہ گئے ہیں ہمیں کرکٹ کی بہتری کے لئیے فوری اقدامات کرنے کی ضرورت ہے۔ رمیز راجہ

ہم غلط طور پر لوگوں کو سپر سٹار بنا دیتے ہیں اور ہمارے ملک میں کرکٹ کا ڈھانچہ ٹھیک نہیں ہے۔ رمیز راجہ

پاکستان ایگریسو باؤلنگ تو ٹھیک کرواتا ہے لیکن جب مار پڑتی ہے تو پھر صورت حال کو کنٹرول نہیں کر پاتا۔ رمیز راجہ

پاکستان کرکٹ کا ڈھانچہ بہت اچھا تھا لیکن ہم نے اس میں بہت زیادہ تبدیلیاں کر کے اسے تباہ کر دیا ہے۔ عامر سہیل

ہمیں کرکٹ کے ڈھانچے کو نئے طریقے سے ٹھیک کرنا ہو گا لیکن لگتا ہے کہ ابھی پاکستان ٹیم کا زوال کچھ دیر اور چلے گا۔ رمیز راجہ

جب نواز شریف وزیراعظم بنے تو عامر سہیل ان سے ملاقات کرنے گئے تھے کرکٹ بورڈ میں عہدہ نہیں ملا تو اب ان کے خلاف بول رہے ہیں۔ ڈاکٹر مصدق

مصطفی کمال کی پارٹی کے نام پر تھوڑا تعجب ہوا سیاسی جماعت کم اور ترانہ زیادہ لگتا ہے۔ شاہ محمود قریشی

سندھ کی سیاست میں تبدیلی آ رہی ہے لوگ ایم کیو ایم اور پیپلز پارٹی کی سیاست سے لا تعلق ہو رہے ہیں۔ شاہ محمود قریشی

ایم کیو ایم میں پہلے گروپنگ کی باتیں ہوتی تھیں اب کھل کر سامنے آ گئے ہیں۔ شاہ محمود قریشی

کوئی سوچ نہیں سکتا تھا کہ کراچی میں بیٹھ کر کوئی الطاف حسین کو چیلنج کرے گا آ ج یہ ہو رہا ہے ہم دیکھ رہے ہیں۔ شاہ محمود قریشی

دو ہزار تیرہ کے الیکشن میں لوگوں کو تحریک انصاف کی شکل میں ایک متبادل دکھائی دیا انہوں نے ووٹ دئیے لیکن ہم اس کا فائدہ نہیں اٹھا سکے۔ شاہ محمود قریشی

مسلم لیگ ن اندرون سندھ اپنے لئیے جگہ بنا سکتی ہے۔ ڈاکٹر مصدق

کراچی کی سیاست میں خلا ہے اور نئی سیاسی جماعت کا آنا ایک خوش آئین بات ہے۔ ڈاکٹر مصدق

میں نہیں سمجھتا کہ سندھ کی حد تک لوگ مسلم لیگ ن کو ووٹ دیں گے اس نے مایوس کیا لاتعلق ہو گئی۔ شاہ محمود قریشی

مسلم لیگ فنکشنل نےبھی سندھ کے لوگوں کو مایوس کیا اور تحریک انصاف کو بھی اپنا احتساب کرنا ہو گا۔ شاہ محمود قریشی

مسلم لیگ ن کی حکومت نے کسی صوبے کی حکومت میں مداخلت نہیں کی اس لئیے یہ تاثر مل رہا ہے کہ شاید لوگ ہمارے ساتھ نہیں ہیں۔ ڈاکٹر مصدق

خدمت کا مقابلہ ہے مصطفی کمال اگلے دو سالوں میں کوئی تبدیلی لے آئے اور خدمت کی تو لوگ ان کا ساتھ دیں گے ورنہ نہیں۔ ڈاکٹر مصدق