13 June, 2016 16:09


NADEEM MALIK LIVE

http://videos.samaa.tv/NadeemMalik/

13-JUNE-2016

عوامی مسلم لیگ طاہرالقادری کے دھرنے میں شرکت کرے گی لیکن تحریک انصاف شامل نہیں ہو گی۔ آج کے واحد مہمان شیخ رشید احمد کی ندیم ملک لائیو میں گفتگو

آخر کار نواز شریف کے خلا ف طاہرالقادری کو چودہ شہیدوں کے خون کا مقدمہ ضرور درج ہو گا۔

طاہرالقادری تو پھر بھی ملک میں آ جاتا ہے یہاں کے بڑے بڑے لیڈر تو خود ساختہ جلا وطنی کی زندگی گزار رہے ہیں۔

میں نے تجویز دی تھی کہ نواز شریف کی جگہ شہباز شریف یا چوہدری نثار کو وزیراعظم بنا دیں۔

نوا ز شریف نے کہا کہ صرف اس کی لاش پر ہی کوئی اور وزیراعظم بن سکتا ہے۔

عوامی مسلم لیگ تیار ہے جولائی میں ریلیاں نکالے گی۔

مولانا فضل الرحمان اس ملک کی سیاست کے لئیے گالی بن گیا ہے کہتا ہے کہ مجھے جنرل راحیل نے موقع نہیں دیا اس لئیے نواز شریف سے مل گیا۔

خورشید شاہ سے میری آج بات ہوئی ہے کہتا ہے کہ تمام فیصلے اپوزیشن کے ساتھ مل کر ہوں گے۔

آصف علی زرداری کے بارے میں فوج کے اندر نرمی پید اہوئی ہے۔

نواز شریف کے لئیے دو ہزار سولہ پاکستان میں سیاست کرنے کا آخری سال ہو گا۔

ملک میں سیاسی تبدیلی آنے والی ہے اور فوج اس میں اہم رول ادا کرے گی۔

نواز شریف کو کوئی نہیں گرا رہا وہ خود گر رہا ہے۔

چوہدری نثار کے ساتھ پینتالیس سے ساٹھ لوگ مل چکے ہیں۔

گوادر کے آپریشنل ہونے سے پہلے پاکستان کے اندر کوئی بہت بڑا آپریشن ہوسکتا ہے۔

نواز شریف کی کوئی خارجہ پالیسی نہیں ہے اس نے فوج کو سینڈ وچ بنا دیا ہے ایک طرف افغانستان ہے تو دوسری طرف بھارت ہے۔

طارق فاطمی امریکہ کا انفلونسڈ ایجنٹ ہے جنرل رضوان نے اسے کاؤنٹر کیا ہے۔

اگر چوہدری نثار وزیراعظم بن گئے تو میں جمہوریت کی خاطر انہیں ووٹ دوں گا۔

جنرل راحیل شریف شہیدوں کے خاندان سے ہیں اگر انہوں نے کہا ہے کہ وہ ایکسٹینشن نہیں لیں گے تو نہیں لیں گے۔

جنرل راحیل شریف کے بعد جو تین ٹاپ جرنیل ہیں وہ بھی سمجھتے ہیں کہ حکومت سے ملک نہیں چل رہا۔

صرف فوج ہی ہے جو پاکستان کو موجودہ صورت حال سے ہمہ گیر کوشش کر کے نکال سکتی ہے۔

عمران خان کی جماعت اگر دوسری جماعتوں کو ساتھ لے کر نہیں چلے گی ت یہ اس کی بہت بڑی غلطی ہو گی۔

نواز شریف کی حکومت میں ملک نہ آگے جاتا ہے اور نہ پیچھے جاتا ہے تین سالوں میں صرف تین سو میگا واٹ بجلی پیدا کی گئی ہے۔

پاکستان کی فوج کے لئیے خونی سال آ سکتا ہے دشمن ہر صورت پاک چائنا کاریڈور کے منصوبے کو ناکام کرنا چاہتا ہے۔

مصفطی کمال مہاجروں کی جماعت سے نکلے ہیں اس بات کو نظر انداز نہیں کرنا چاہئیے۔

آج پاکستان کی ہر سیاسی جماعت سے ایک مصطفی کمال نکل رہا ہے۔

تحریک انصاف کے نوجوان دوسری جماعتوں سے آئے ہوئے لیڈروں کو قبول نہیں کر رہے۔

حکومت کو ٹی او آرز کو ماننا پڑے گا نہیں مانے گی تو اس کے لئیے بہت برا ہو گا۔

مسلم لیگ ن کے میڈیا سیل کی وجہ سے نواز شریف کے آپریشن کے بارے میں بھی لطیفے بن چکے ہیں۔