21 July, 2016 17:20


NADEEM MALIK LIVE

http://videos.samaa.tv/NadeemMalik/

21-JULY-2016

کراچی کے حالات جب مسلم لیگ ن کی حکومت آئی تو اس وقت سے آج بہت بہتر ہیں۔ شاہد خاقان عباسی کی ندیم ملک لائیو مٰں گفتگو

یہ سندھ حکومت پر ہے کہ رینجرز اسے چاہییں یا نہیں چاہئییں وہ لکھ کر دے دے۔ شاہد خاقان عباسی

رینجرز کراچی کا مستقل حل نہیں ہے سندھ حکومت خود فیصلہ کرے اور حالات کو ٹھیک کرنے کی کوشش کریں۔ شاہد خاقان عباسی

کوئی غیر جمہوری عمل بھی درست نہیں ہو گا پیپلز پارٹی کی حکومت کو مسائل کا پتہ ہے ان کے حل کی کوشش کرے۔ شاہد خاقان عباسی

کراچی میں پولیس کو بھی ٹھیک کرنے کے لئیے بھی ایک ڈیڈ لائن ہونی چاہئیے۔ شاہد خاقان عباسی

رینجرز نے کراچی میں بہت اچھا کام کیا اور اس کے بہت اچھے نتائج سامنے آئے۔ قمر زمان کائرہ

ہم نے کہا تھا کہ اگر رینجرز اپنے اختیارات سے تجاوز کرے گی تو اس کو نقصان ہو گا۔کائرہ

زیادہ بہتر ہوتا اگر رینجرز کی مدت ختم ہونے سے پہلے اس کو توسیع دے دی جاتی۔ کائرہ

لا اینڈ آرڈرکے معاملات کا لوگوں کے سامنے زیر بحث آنا اچھی بات نہیں ہے۔ رضا ہارون

شاہراہ دستور پر بننے والے اپارٹمنٹس میں ہونے والی بے ضابطگیوں پر تحقیقات ہونی چاہئییں۔ شاہد خاقان عباسی

شاہراہ دستور پر بننے والے اپارٹمنٹس پر ایک سال سے پوچھ رہے ہیں اب تک جواب نہیں دیا گیا۔ اسد عمر

اسلام آباد میں تراسی کالونیاں ایسی ہیں جو غیر قانونی طریقے پر تعمیر کی گئی ہیں۔ اسد عمر

جب تک کرپشن کے خلاف کروائی نہیں کی جائے گی ٹالک شوز اور احتجاج سے کوئی فرق نہیں پڑے گا۔ اسد عمر

کرپشن پکڑنا بہت مشکل ہے لیکن چھپانا آسان نہیں ہے ہر کسی سے تحقیات ہونی چاہئییں۔ شاہد خاقان عباسی

سب کو کرپشن کے خلاف مل کر بیٹھنا ہو گا ورنہ جس جے خلاف کاروئی ہو گی وہ کہے گا کہ اس کو نشانہ بنایا جا رہا ہے۔ شاہد خاان عباسی

میثاق جمہوریت میں ہم نے کہا تھا کہ کرپشن کے خلاف بھی قانون پاس ہونا چاہئیے لیکن ایسا نہیں ہو سکا۔ کائرہ

شاہراہ دستور پر بلڈنگ بنانے والوں کو پروگرام میں بلا کر جواب لینا چاہئیے کسی کے ساتھ زیادتی نہیں ہونی چائیے۔ کائرہ

شاہد خاقان عباسی ٹالک شوز میں تو اچھی باتیں کرتے ہیں لیکن باہر نکل کر ان پر عمل نہیں کرتے۔ اسد عمر

میں نے کہا تھا کہ تمام پارلیمنٹیرین کا آڈٹ کرایا جائے سب کو معلوم ہے کہ اس کا کیا حال ہوا۔ اسد عمر

ہمارے ملک کو جتنا نقصان احتساب کے ادارے پہنچا رہے ہیں اتنا کوئی اور نہیں پہنچا رہا۔ شاہد خاقان عباسی

احتساب کے ادارے ایک روپے کی کرپشن کے الزم میں افسروں کو تفتیش کے لئیے بلا لیتے ہیں وہ کام کیا کریں گے۔ شاہد خاقان عباسی

یہ طے ہوا تھا کہ ایک ہی قسم کے ٹی او آرز بنیں گے سب کا ان کے تحت احتساب ہو گا لیکن آغاز وزیراعظم کے بیٹوں سے ہو گا۔ کائرہ

حکومتی وزرا کہتے ہیں کہ وزیراعظم کا تو نام بھی پاناما لیکس میں نہیں لینا۔ کائرہ

عمران خان کا پاناما لیکس میں نام بھی نہیں ہے لیکن پھر بھی انہوں نے اپنے آپ کو احتساب کے لئیے پیش کر دیا ہے۔ کائرہ

میں اپنی جماعت اور اپوزیشن کی طرف سے زمہ لیتا ہوں کہ ایک ہی قسم کے ٹی او آرز کے زریعے عمران خان اورسب کا احتساب ہو گا لیکن آغاز وزیراعظم سے ہو گا۔ کائرہ

جس میڈیا ٹالک شو میں عمران خان نے احتجاج کا اعلان کیا تھا اسی میں کہا تھا کہ حکومت ٹی او آرز مان لے تو وہ احتجاج کو ختم کر دیں گے۔ اسد عمر