9 November, 2016 16:17


NADEEM MALIK LIVE

http://videos.samaa.tv/NadeemMalik/

09-NOVEMBER-2016

پاناما لیکس کے مقدمے کو ٹی وی پر زیر بحث نہیں لانا چاہئیے عدالت سے باہر عدالت نہیں لگایں۔ محسن شاہنواز رانجھا کی ندیم ملک لائیو میں گفتگو

جو کاغزات بھی عدالت میں پیش کئیے جایں گے مسلم لیگ ن ان کا جواب دے گی۔ محسن شاہنواز رانجھا

جب عدالت نے پی ٹی آئی کے وکیل حامد خان سے پوچھا کہ ان کے پاس کیا ثبوت ہیں تو انہوں نے کہا کہ ان کے پاس کوئی ثبوت نہیں ہیں۔ محسن شاہنواز رانجھا

حامد خان نے کبھی بھی عدالت کو یہ نہیں کہا کہ ان کے پاس پاناما لیکس پر کوئی ثبوت نہیں ہیں۔ اسد عمر

پی ٹی آئی نے پاناما لیکس پرعدالت میں پانچ سو صفحات کے ثبوت پیش کئیے ہیں۔ اسد عمر

جب ایک گورنر اپنے کردار سے تجاوز کرتا ہے تو پھر اسے جانا ہوتا ہے۔ رضا ہارون

اگلے چند دنوں میں پتہ چل جائے گا کہ ڈاکٹر عشرت العباد کو گورنر کے عہدے سے کیوں ہٹا دیا گیا ہے۔رضا ہارون

بہتر ہوتا اگر حکومت سندھ کے گورنر کو تبدیل کرنے سے پہلے صوبائی حکومت سے مشورہ کر لیتی۔شرمیلا فاروقی

گورنر کو تبدیل کرنے سے پہلے سندھ کی حکومت سے مشورہ کرنے سے وفاقی اور صوبائی حکومت کے تعلقات پر اچھا اثر پڑتا۔ شرمیلا فاروقی

پیپلز پارٹی ڈاکٹر عشرت العباد کے گورنر کی حیثیت سے چلے جانے پر نہ خوش ہے اور نہ ناراض ہے۔ شرمیلا فاروقی

ڈاکٹر عشرت العباد نے گورنر کی حیثیت سے ہر سیاسی جماعت کے ساتھ بہت اچھے تعلقات رکھے۔ شرمیلا فاروقی

پیپلز پارٹی نے ڈاکٹر عشرت العباد کو پارٹی میں شامل ہونے کی دعوت نہیں دی آئین کے تحت بھی ابھی انہیں دو سال تک انتظار کرنا ہو گا۔ شرمیلا فاروقی

ڈاکٹر عشرت العباد بہت متنازع ہوتے جا رہے تھے اس لئیے حکومت نے انہیں تبدیل کر دیا ہے۔ محسن شاہنواز رانجھا

گورنر کی تبدیلی کوئی بہت بڑی سیاسی بات نہیں ہے جسٹس سعید الزمان صدیقی بہت اچھے انسان ہیں۔ اسد عمر

میرے لئیے یہ بات زیادہ دلچسپی کی ہو گی کہ ڈاکٹر عشرت العباد اب کسی سیاسی جماعت میں شامل ہوں گے۔ اسد عمر

مسلم لیگ ن کی حکومت کو عوام کو بتانا چاہئیے کہ سندھ کے گورنر کو انہوں نے کیوں تبدیل کیا ہے۔ رضا ہارون

میں کہہ سکتا ہوں کہ محسن شاہنواز رانجھا کو بھی معلوم نہیں ہے کہ ان کی حکومت نے سندھ کے گورنر کو کیوں بدلا ہے۔ رضا ہارون

مجھے واقعی نہیں معلوم کی مسلم لیگ ن کی حکومت نے سندھ کے گورنر کو کیوں بدلا ہے کیونکہ یہ وزیراعظم کا اختیار ہے۔ محسن شاہنواز رانجھا

مسم لیگ ن پاناما لیکس پر عدالت میں وہی کر رہی ہے جو ایک غلط بیانی کرنے کے بعد کیا جاتا ہے۔ اسد عمر

مسلم لیگ ن والے ٹی وی شوز میں ہمارا مزاق اڑاتے تھے کہ ہمیں سول بینیفشری کے مطلب کا نہیں پتہ ہے۔ اسد عمر

اب مسلم لیگ ن نے عدالت میں کہہ دیا ہے کہ مریم نواز کسی کمپنی کی سول بینیفشری ہی نہیں ہیں۔ اسد عمر

پاناما لیکس کا معاملہ پارلیمنٹ میں طے ہو جاتا تو بہتر ہوتا لیکن پی ٹی آئی نے سولو فلائٹ لے لی ہے۔ شرمیلا فاروقی

مسلم لیگ ن والے ہر روز پریس کانفرنس کر کے بہت سے الزامات لگاتے ہیں لیکن کبھی بھی پاناما لیکس کے الزامات کا جواب نہیں دیتے۔ شرمیلا فاروقی

جمہپوریت کی بنیاد ادارے ہوتے ہیں اور پاناما لیکس جیسے سکینڈلز کی وہ تحقیقات کرتے ہیں۔ رضا ہارون

یہ ماننا ہو گا کہ پارلیمنٹ اور دوسرے ادارے پاناما لیکس کی تحقیقات کرنے میں ناکام ہوئے۔ رضا ہارون

پی ٹی آئی نے بھی عمران خان اور جہانگیر ترین کی آف شور کمپنیوں پر جواب دینے کے لئیے وقت ماناگا ہے ابھی جواب جمع نہیں کروایا۔ محسن شاہنواز رانجھا

پیپلز پارٹی نے پی ٹی آئی کے ساتھ مل کر جو ٹی اور آرز بنائے تھے ان میں یہی کہا تھا کہ پاناما لیکس کے کیس کو عدالت لے جایا جائے۔ اسد عمر

اگر عمران خان اور جہانگیر ترین کی آف شور کمپنیاں ہیں تو حکومت آج تک ان کے جرم پر پردہ کیوں ڈالتی رہی۔ اسد عمر

پاناما لیکس کا مسئلہ اٹھنے کے ایک ماہ بعد حکومت کو عمران خان اور جہانگیر ترین کی آف شور کمپنیوں کا خٰیال آ گیا۔ اسد عمر