14 November, 2016 16:38


NADEEM MALIK LIVE

http://videos.samaa.tv/NadeemMalik/

14-NOVEMBER-2016

پاکستان اور بھارت کے درمیان ہونے والے آج جیسے واقعات کی وجہ سے دونوں ملکوں میں جنگ نہیں ہوسکتی۔ عبدالقادر بلوچ کی ندیم ملک لائیو میں گفتگو

جب میں فوج میں تھا تو میرا حکم تھا کہ ایک کے مقابلے میں بھارت کے تین فوجی مارنے ہیں اور ہم مارتے تھے۔ عبدالقادر بلوچ

سرحد پر سات فوجیوں کا شہید ہو جانا معمول کی بات ہے یہ ہوتا رہتا ہے۔ عبدالقادر بلوچ

بھارت آج جیسے حملے کر کے آگ کے سات کھیل رہا ہے لائن آھ کنٹرول کی مسلسل خلاف ورزی کر رہا ہے۔ شاہ محمود قریشی

پاکستان کیطرف سے مناسب رد عمل نہیں دیا جا رہا ہے وزیردفاع سیالکوٹ میں جشن منا رہے ہیں انہیں اپنے جوانوں کے ساتھ مل کر ا ظہار یک جہتی دکھانا چاہئیے تھا۔ شاہ محمود قریشی

وزیراعظم خضدار میں جاتے لیکن بلوچستان کے اضلاع بہت دور دور ہیں۔ عبدالقادر بلوچ
درگاہ شاہ نورانی کے ارد گرد کوئی نہیں رہتا شہید ہونے والے سندھ کے لوگ تھے۔ عبدالقادر بلوچ

وزیراعظم گوادر تو جا ہی رہے تھے خضدار بھی چلے جاتے لوگوں کو حوصلہ مل جاتا۔ شاہ محمود قریشی

پاکستان بات چیت کے لئیے تیار ہے لیکن بھارت اپنے اندرونی سیاسی مفاد کی وجہ سے بات چیت نہیں کرنا چاہتا۔ شاہ محمود قریشی

تمام سختیوں کے باوجود کشمیری باہر نکل رہے ہیں ہندوستان یہ جنگ ہار چکا ہے۔ شاہ محمود قریشی

ہماری کوئی خارجہ پالیسی نہیں ہے کسی کو معلوم نہیں ہے کہ ہماری خارجہ پالیسی کیا ہے۔ ندیم افضل چن

پارلیمنٹ میں خارجہ پالیسی کشمیر کا مسئلہ خارجہ ہمسایہ مملک کے ساتھ تعلقات کچھ بھی زیر بحث نہیں آتا۔ ندیم افضل چن

فارن آفس سویا ہوا ہو گا تو پھر بارڈر پر ٹینشن ہی ہو گی۔ ندیم افضل چن

حکومت میں ایسے ایسے لوگ ہیں جو یہ کہتے ہیں کہ بارڈر پر ٹینشن ہو گی تو ہماری طرف سے دھیان ہٹے گا۔ ندیم افضل چن

ہمارا لائین آف کنٹرول کی خلاف ورزی کشمیر یا کسی بھی مسئلے پر کوئی پولیٹیکل بیک اپ نہیں ہے۔ ندیم افضل چن

حکومت پارلیمنٹ میں کوئی مسئلہ نہیں لائی تو پیپلز پارٹی اپوزیشن کی لیڈر ہے یہ کونسا مسئلہ لے کر آئی اس کی بھی زمہ داری ہے۔ عبدالقادر بلوچ

ڈان نیوز کی خبر کے متعلق حکومت نے کہا کہ یہ من گھڑت ہے تو پھر پرویز رشید کو کیوں نکالا۔ شاہ محمود قریشی

جسٹس صدیقی کو سندھ کا گورنر لگایا دوسرے دن وہ صحت کے مسئلے کی وجہ سے ہسپتال پہنچ گئے حکومت کیسے فیصلے کر رہی ہے۔ شاہ محمود قریشی

کشمیر حکومت کی ترجیح نہیں ہے اس کے اپنے مفادات سب سے زیادہ اہم ہیں۔ شاہ محمود قریشی

حکومت خوفزدہ ہے کہ کشمیر کے مسئلے پر بات کرنے سے انٹرنیشنل فورسز اس سے ناراض نہ ہو جایں۔ شاہ محمود قریشی

اس وقت لائن آف کنٹرول پر بھارت کی خلاف ورزی کا کشمیر اور بھارت کی اندرونی سیاست کے ساتھ تعلق ہے جسے حکومت سمجھ نہیں پا رہی۔ شاہ محمود قریشی

حکومت نے پاناما لیکس پر اب تک اپنے ثبوت نہیں دئیے کل تاریخ سے پہلے اپنا وکیل تبدیل کر دیا ہے یہ تاریخی حربے ہیں۔ شاہ محمود قریشی

حکومت کے پاس اپنے بیگناہ ہونے پر ثبوت ہیں تو پیش کیوں نہیں کرتی۔ شاہ محمود قریشی

حکومت پاناما لیکس کے راستے میں کوئی رکاوٹ کھڑی نہیں کرے گی۔ عبدالقادر بلوچ

پی ٹی آئی نے پاناما لیکس پر ٹھوس ثبوت دئیے ہیں ہمیں یقین ہے کہ یہ اوپن اینڈ شٹ کیس ہے۔ شاہ محمود قریشی

سپریم کورٹ پاناما لیکس پر جو بھی فیصلہ کرے گی اسے تسلیم کریں گے۔ شاہ محمود قریشی