13 June, 2017 17:57


NADEEM MALIK LIVE

www.samaa.tv/videos/NadeemMalik

13-JUNE-2017

آج جے آئی ٹی نے سپریم کورٹ میں جو رپورٹ جمع کروائی ہے وہ بم شیل ہے۔ فواد چوہدری کی ندیم ملک لائیو میں گفتگو

کیا اب بھی سپریم کورٹ اپنی تحقیقات جاری رکھے گی اور جن لوگوں نے جے آئی ٹی پر الزامات لگائے ہیں ان کے خلاف کوئی کاروائی نہیں کرے گی۔

جے آئی ٹی کے رکن بلال رسول اور ان کے ملازموں کو آئی بی والے دھمکیاں دے رہے ہیں۔

اسلام آباد میں سی ڈی اے والے آج نواز شریف کے بینرز لگا رہے تھے۔

جہلم میں مسلم لیگ ن نے اپنے ایم پی ایز کو ہدایت کی ہے کہ ہر کوئی نواز شریف کی جے آئی ٹی کے سامنے پیشی والے دن دو دو ہزار بندہ لے کر آئے۔

پیپلز پارٹی کے مولا بخش چانڈیو نے کہا کہ

تین چھوٹے صوبے دیکھ رہے ہیں کہ ایک صوبے کی جماعت سپریم کورٹ کو دھمکیاں لگا رہی ہے۔

شریف خاندان کو اتنی رعایت کیوں دی جا رہی ہے کوئی چھوٹے صوبے کا بندہ ہوتا تو اب تک اس کے خلاف کاروائی ہو چکی ہوتی۔

مسلم لیگ ن والے عدلیہ کے بارے میں سخت زبان استعمال کر رہے ہیں ان کو اس کی اجازت کیوں ہے۔

اداروں کے تقدس میں قوم کی امید ہوتی ہے ان پر تنقید کرنے سے امید ختم ہو جاتی ہے۔

بار ایسوسی ایشن ک سابقہ صدر سید علی ظفر نے کہا کہ

جے آئی ٹی پر تنقید کرنا شریف خاندان کا حق ہے لیکن ایگزیکٹو جان بوجھ کر جے آئی ٹی کے کام میں رکاوٹ ڈال رہی ہے۔

سپریم کورٹ کا کام ہے کہ جو لوگ جے آئی ٹی کے کام میں رکاوٹ ڈال رہے ہیں ان کا نوٹس لے۔

جے آئی ٹی نے اپنی رپورٹ میں جو الزامات لگائے ہیں وہ بہت سیریس قسم کے ہیں۔

مسلم لیگ ن کے ڈاکٹر مصدق ملک نے کہا کہ

ہمیں کسی بات کا علم نہیں ہے تمام الزامات مفروضوں پر مبنی لگائے جا رہے ہیں۔

جے آئی ٹی نے طارق شفیع کو دھمکی لگائی کہ انہیں سولہ سال کے لئیے بند کر دے گی۔

جے آئی ٹی اپنے آپ کو متنازع بنانے کی کوشش کر رہی ہے سپریم کورٹ اس کو روکے۔

جے آئی ٹی کسی کے خلاف دھونس اور دھاندلی نہیں کر سکتی۔

http://naeemmalik.wordpress.com/

Advertisements